Lamha-e Fikriya / لمحہ فکریہ  
 
Qaum-e Mehdaviya mein aaj kal shadiyon ke liye jahez par, rukhsati ke khano par, is ke lawazimaat jaise Mehandi, paunmays, saanchaq, manja, jumagi waghairah par jo be-lagaam maal o waqt ki barbadi ho rahi hai aur har din is mein izafa hi ho raha hai jis ke nateeje mein mutawasit tabqa aur ghareeb beti walon ki zindagi bhar ka sarmaya aik jhatke mei sifar (zero) ho jata hai. Sitam zareefi ye bhi hai ke aise khandano ke a'daad kam o besh 80% hain. Is israaf aur beja rasumaat ko apne ooper lazim samajhne ki waja se sood, bheek, chanda, rishwat, aur haram ki kamaai ke darwaze be-dhadak khul gaye hain. Huqooq-e niswa.n mein be-adlee aam ho gayi hai. (yani ladkiyon ka haq-e virasat shadi ki taqareeb, jahez o jode ki raqm waghairah mein barbaad karna). Al-gharz shadi ke naam par Qur’an ka (jo ke ayn sunnat hai) dil khol kar mazaq udaya ja raha hai. Nez, Hukm-e Qur'ani ka ek ahem farerza "Amr bil ma'raroof wa nahi al-munkar" poora karne ki gharz se Qaum ke har fard ko is muhim mein shamil hone ki hum mukhlisana dawat dete hain.
 
قومِ مہدویہ میں آج کل شادیوں کے لئے جہیز پر, رخصتی کے کھانوں پر, اور ان کے لوازمات جیسے مہندی, پاونمیس, سانچق, منجے, جمعگی وغیرہ پر جو بےلگام مال و وقت کی بربادی ہو رہی ہے اور ہر دن اس میں اضافہ ہی ہو رہا ہے جس کے نتیجے میں متوسط طبقہ اور غریب بیٹی والوں کی زندگی بھر کا سرمایہ ایک جھٹکے میں صفر ہو جاتا ہے. ستم ظریفی یہ بھی ہے کہ ایسے خاندانوں کے اعداد کم و بیش %80 ہیں اس اسراف و بیجہ رسومات کو اپنے اوپر لازم سمجھنے کی وجہ سے سود, بھیک, چندہ, رشوت اور حرام کی کمائ کے دروازے بے دھڑک کھل گئے ہیں_ , حقوقِ نسواں میں بے عدلی عام ہو گی ہے (یعنی لڑکیوں کا حقِ وراثت شادی کی تقاریب, جہیز و جوڑے کی رقم وغیرہ میں برباد کرنا)_ الغرض شادی کے نام پر قرآن کا (جو کہ عین سنت ہے) دل کھول کر مذاق اڑایا جا رہا ہے نیز, حکمِ قرآنی کا ایک اہم تقاضا " امر بال معروف و نھی المنکر"ِ پورا کرنے کی غرض سے قوم کے ہر فرد کو اس مہم میں شامل ہونے کی ہم مخلصانہ دعوت دیتے ہیں
 
  AHED NAMA / عہد نامہ  
  بسم اللہ الرحمن الرحیم  
 
Main ___________________ har aisi shadi ki taqareeb ko ghair shara’ii samajh kar shirkat nahin karunga / karungi jis mein ladki walon se Jahez ya rukhsati ka khana liya jata ho (chahe khushi se hi kyun na ho). Ahd-e hazir mein ye len-den rishwat, bheek, Huqooq-e niswa.n mein be-adlee, fitna parwari aur israaf o tabzeer mein dakhil hai jo az-ru-e shari’at hargiz jayez nahin. Is ke alawa shadi ki is sunnat amal mein Jis ko RasoolAllah SWS ne “Meri Sunnat” kah kar mukhatib farmaya hai har ghair musalmana rasm o riwaj se bhi bezargi ka izhaar karta / karti hun.
 
میں ______________________ ہر ایسی شادی کی تقاریب کو غیر شرعی سمجھ کر شرکت نہیں کرونگا / کرونگی جس میں لڑکی والوں سے جہیز یا رخصتی کا کھانا لیا جاتا ہو ( چاہے خوشی سے ہی کیوں نہ ہو) - عہدِ حاضر میں یہ لین دین رشوت, بھیک, حقوقِ نسواں میں بے عدلی , فتنہ پروری, اسراف و تبزیر میں داخل ہے جو از روئے شریعت ہرگز جائز نہیں _ اس کے علاوہ شادی کی اس سنت عمل میں جس کو رسول اللہ ﷺ نے “میری سنت” کہہ کر مخاطب فرمایا ہے ہر غیر مسلمانہ رسم و رواج سے بھی بیزارگی کا اظہار کرتا / کرتی ہوں
 
Signature Date Place
Email ID Phone Witness
 
اعداد و شمار کیلئے برائے مہربانی دستخط کرنے کے بعد اس فارم کو مندرجہ واٹس اپ پر بھیج دیں
 
اس پیج کو ڈاونلوڈ کرکے پرنٹ اور دستخط کرنے کے لئے یہاں کلک کریں
 
Is page ko download karke print and sign karne ke liye yahan click karen

A’dad o shumar ke liye dastakhat karne ke baad ba-raye meherbani is form ko mundarja WhatsApp numbers par iski photo bhej den.

WhatsApp (Men): 00966 50083 4478 / 0091 8008245395 / 00165028111080
WhatsApp (Women): 00966 565179202
 
home | for beginners | audio library | elibrary | hadith | naqliyat | noor-e-vilayat | articles | contact us | subscribe | unsubscribe | search